Tue. Jun 25th, 2024
418 Views
“زچہ اور بچہ کی صحت “
تحریر۔فرخندہ اسحاق ظفر
پچھلے ہفتے ایک ایسی ماں کی عیادت کےلئے ہسپتال جانا ہوا۔  جس نے قبل از وقت بچے کو جنم دیا تھا ۔اسکا نومولود معجزانہ طور پر سانسیں لے رہا تھا۔ (بچے کا جسمانی نظام مکمل نہیں تھا اس لئے وہ چند گھنٹے ہی ذندہ رہا) ۔دوسری جانب رابعہ جسکا تعلق ہمارےگاؤں سے تھا زندگی اور موت کی کشمکش میں مبتلا تھی۔ اسکا بلڈ پریشر کنٹرول نہیں ہو رہا تھا۔ بیٹی کی پیدائش کے ساتھ ہی رابعہ خالق حقیقی سے جا ملی۔  ایک ماں  کی گود اجڑ گئی جبکہ دوسری جان کی بازی ہار گئی – موت تو بر حق ہے مگر افسوس اس بات کا ہے کہ ہمارے شہر میں زچہ بچہ کے لئے ایک اچھا سا ہسپتال تک میسر نہیں ۔  ہسپتالوں کطبی مراکز کی کمی ،تربیت یافتہ عملے کا فقدان،ادویات کی عدم فراہمی اور بہت سے ایسے عوامل ہیں جو زچہ و بچہ کےلئے جان لیوا ثابت ہوتے ہیں۔ طبی ماہرین  زچگی کے دوران اموات کی بنیادی وجہ اینیمیا اور خون کی کمی سے منسلک بیماریوں کو قرار دیتے ہیں اسکے علاو بچے کی پیدائش کے وقت زیادہ تر پیچیدگیاں ہائی بلڈ پریشر کے باعث ہوتی ہیں  زچہ وبچہ ماہرین کے نزدیک جب ایک عورت حاملہ ہوتی ہے تو اسے ہر مہینے اپنی گائناکالوجسٹ سے مل کر معائنہ اور مشورہ کرناچاہیے۔چونکہ وجود کے اندر ایک دوسرے وجود کی تخلیق کاعمل شروع ہونے سے حاملہ خاتون کی غذائی ضروریات بدل جایا کرتی ہیں۔بچے کے وجود کی ساخت،اعضاء کی بناوٹ اور جسم کی پرورش با لواستہ طور پر ماں کی غذا سے ہوتی ہے۔لہٰذا زچہ کو دورانِ حمل ایک مکمل،متوازن اور بھرپور غذا کا استعمال کرنا چاہیے۔ایسی تمام سرگرمیاں جن سے بچے کی نشو ونما میں رکاوٹ،خرابی یا جزوی طور پر اعضاء میں نقص پیدا ہونے کا اندیشہ ہو ترک کر دینی چاہیے۔سیڑھیاں چڑھنے، سخت کام کرنے،بھاری وزن اٹھانے ،ناقص غذا کھانے، یا اپنے معالج سے مشورہ کیے بغیر پین کلرز ،اینٹی بائیو ٹیک اور اسٹیرائیڈز کا با لکل استعمال نہیں کرنا چاہیے۔تمام موسمی سبزیاں،موسمی پھلوں کے جوسز بکثرت اور حسبِ گنجائش استعمال کرنے چاہیے۔آئرن،کیلشیم،فاسفورس،میگنیشیم،،پروٹینز، نشاستہ،وٹامنز اور مفید چکنائیوں سے بھرپور غذائیں استعمال کی جائیں ۔دنیا بھر میں بلڈ پریشر اور اس کی پیچیدگیوں کی وجہ سے حاملہ عورتوں کے مرنے کی شرح سب سے زیادہ ہے۔ بلڈپریشر سے ہونے والی پیچیدگیوں میں فالج، گردے فیل ہونا، نابینا پن، ہارٹ اٹیک، بچے کی پیٹ میں موت اور مرگی جیسے دورے شامل ہیں۔اگر حاملہ عورت کو اچانک چکر آنے لگیں، سر میں درد رہنے لگے، جی متلا نے لگے، پاؤں سوج جائیں تب بھی فوراً بلڈ پریشر چیک کروانا چاہیے۔ یقین کیجیے جسم ہمیشہ خطرے کی گھنٹی بجاتا ہے تاکہ بروقت سد باب کیا جاسکے۔ زچگی کے دوران زچہ بچہ کی ہلاکتوں کی روک تھام کے لئے  ہسپتالوں میں صحت کی سہولتوں کو بہتر بنانا اور عوام میں احتیاطی تدابیر سے متعلق آگاہی پیدا کرنا بہت ضروری ہے۔

By ajazmir