Sat. Nov 26th, 2022
136 Views

مظفرآباد: وزیراعظم آذاد کشمیر سردار تنویر الیاس خان کی جانب سے لاہور سے آئے ہوئے سینئر صحافیوں،اینکر پرسنز،الیکٹرانک،پرنٹ اور ڈیجیٹل میڈیا کے نمائندگان کے وفد کے اعزاز میں عشائیے کا اہتمام

عشائیے میں وزراء حکومت عبدالماجد خان ،چوہدری علی شان سونی ،چوہدری محمد رفیق نئیر ،سردار میر اکبر خان ،چوہدری محمد رشید ،چوہدری اکبر ابراہیم، ڈاکٹر نثار انصر ابدالی، ،چوہدری اظہر صادق ،سردار فہیم اختر ربانی ،پارلیمانی سیکریٹری جاوید بٹ، سینئر نائب صدر چوہدری ظفر انور، چیئرمین عملدرآمد کمیشن و جنرل سیکرٹری تحریک انصاف آزاد کشمیر راجہ منصور خان، ڈپٹی جنرل سیکرٹری قاضی محمد اسرائیل،مرکزی رہنما میجر (ر) خرم حمید خان روکھڑی، سینئر صحافی نصراللہ ملک ،سیکرٹریز حکومت ،سربراہان محکمہ جات اور مختلف شعبہ ہائے زندگی سے تعلق رکھنے والی شخصیات نے شرکت کی۔

عشائیے میں شرکاء سے خطاب کرتے ہوئے وزیراعظم آزاد کشمیر نے کہا کہ میں نے واضح کیا ہے اگر وفاقی حکومت نے اپنا رویہ نہ بدلا تو فیڈریشن کمزور ہو گی

وزیراعظم پاکستان کو ایڈیشنل چیف سیکریٹری ڈویلپمنٹ کو تبدیل نہ کرنے کی درخواست کی مگر انہوں نے میری بات کو اہمیت نہیں دی

اس سے پہلے لینٹ افسران کو بھیجنے کے لیے پینل حکومتوں کو بھیجا جاتا ہے مگر اب ایسا نہیں ہوا

اب حکومت پاکستان جانے اور ہماری جوڈیشری جانے ہمارے ترقیاتی اور غیر ترقیاتی بجٹ کو کیوں روکا ہوا ہے

ہم پاکستانی ہیں اور پاکستانیت پر غیر متزلزل ایمان ہے

اس کو ہماری کمزوری نہ سمجھا جائے پاکستان کا میڈیا ہماری آواز بنے

وزیراعظم نے کہا کہ وفاق محصولات میں سے ہمیں حصہ دے

شہباز شریف وزارت عظمیٰ کا منصب سنبھالنے کے بعد آزادکشمیر کا ایک دورہ نہیں کر سکے انہیں ریاست جموں و کشمیر سے کوئی دلچسپی نہیں ہے

وزیراعظم پاکستان ریاست کے لوگوں کو سنجیدہ لیں ہمارے پاس اگلے مہینے ملازمین کو تنخواہیں اور پنشن دینے کے پیسے موجود نہیں ہے

چیئرمین تحریک انصاف عمران خان نے اپنے دور حکومت میں کبھی بھی آزاد کشمیر حکومت کے بجٹ پر کٹ نہیں لگایا

جب سے وفاق میں ن لیگ کی حکومت آئی ہے تب سے ہماری ریاست کے ساتھ ناانصافی کی جا رہی ہے

By ajazmir