Wed. Feb 8th, 2023
285 Views

ہٹیاں بالا(بیورورپورٹ)آزاد کشمیر کے ضلع جہلم ویلی کی تحصیل چکار کے مضافاتی علاقے سدھن گلی کے سنگم پر واقعہ گاﺅں جبڑ جنڈالی خوفناک لینڈ سلائیڈنگ کی زد میں سینکڑوں رہائشی مکانات تباہ ہونے کا خطرہ زمین پھٹ گئی متاثرہ فیملیز کو محفوظ مقامات پرمنتقل کیا جانے لگازمین کے سرکنے سے 50 کے قریب رہائشی مکانات لینڈ سلائیڈنگ کی زد میں آگئے کروڑوں روپے مالیت کے نقصانات کا اندیشہ۔تفصیلات کے مطابق تحصیل چکار کے مضافاتی علاقے سدھن گلی کے سنگم پر واقعہ گاﺅں جبڑ جنڈالی کی تقریبا دوکلو میٹر پر محیط زمین نے سرکنا شروع کردیا ہے زمین کے سرکنے اور دراڑیں پڑنے سے 5 رہائشی مکانات مکمل تباہ جبکہ 12 رہائشی مکانات کا جزوی نقصان زمین سرکنے سے مقامی آبادی کا کروڑوں روپے مالیت کا نقصان سینکڑوں افراد کے بے گھر ہونے کے امکانات بڑھ گئے عوام میں شدید خوف وہراس عوامی حلقوں کا کہنا ہے کہ حکومت اور متعلقہ اتھارٹیز جبڑ جنڈالی زمین سرکنے معاملے کا سنجیدگی سے نوٹس لے تانکہ عوام کے جان و مال کو محفوظ بنایا جائے مقامی انتظامیہ جبڑ جنڈالی زمین سرکنے اور ممکنہ لینڈ سلائیڈنگ کی اطلاع ملتے ہی متاثرہ ایریا میں پہنچ گئی لینڈ سلائیڈ متاثرہ فیملیز کو محفوظ منتقل کردیا گیازمین سدھن گلی کے سنگم پر واقعہ گاﺅں جبڑ جنڈالی / بے نظیر پیلس کی عقبی جانب سے سرک رہی ہے جس کے نتیجے میں نیک محمد ولد بہادر دین، مقصود احمد، محمود احمد، مسعود احمد پسران نیک محمد ،حافظ محمد یوسف ولد عبداللہ ساکنان جبڑ جنڈالی کے مکانات مکمل تباہ ہوچکے ہیں جبکہ زمین میں دراڑیں پڑنے اور زمین کے سرکنے کے باعث شعیب ولد کمال دین، فضل حسین ولد محمد حسین، محمد آصف ولد محمد بشیر، روشن ولد بیر محمد، شعیب ولد عالم دین، مستری بشیر ولد گلاب، فرید ولد گلاب، خادم حسین ولد نور علی، فضل حسین ولد نور علی، عبدالرحیم ولد محمد شفیع، زوہیب کمال ولد کمال دین اور محمد جاوید ولد فضل حسین ساکنان جبڑ جنڈالی کے رہائشی مکانات جزوی تباہ ہوکر ناقابل رہائش ہوچکے ہیں جبڑجنڈالی میں زمین کے پھٹنے اور دھسنے سے خوفناک لینڈ سلائیڈنگ جاری ہے نائب تحصیلدار چکار خواجہ عبدالسلام اور حلقہ پٹواری سلمیہ پٹوار شیخ اخلاق نے قومی اخبارات کے نمائندوں کو متاثرہ ایریا کے بارہ میں بریف کرتے ہوئے بتایا کہ جبڑجنڈالی میں زمین کے سرکنے سے خوفناک لینڈ سلائیڈنگ کا اندیشہ ہے زمین کے سرکنے سے پانچ رہائشی مکانات تباہ جبکہ 12 سے زائد جزوی طور پر متاثر ہیں متاثرہ فیملیز کو محفوظ مقامات پر منتقل کیا جارہا ہے نائب تحصیلدارخواجہ عبدالسلام کا بتانا کہ زمین کا تیزی سے سرکنا خوفناک لینڈ سلائیڈنگ کی شکل اختیار کر سکتا ہے جس سے پچاس کے قریب مزید رہائشی مکانات لینڈ سلائیڈنگ کی زد میں آکر تباہ ہو سکتے ہیں مقامی آبادی کو شدید خطرات لاحق ہیں اس بارے اعلی حکام کو آگاہ کردیا ہے متاثرہ آبادی کو محفوظ مقامات پر نقل مکانی کرنے کی ہدایت کردی ہے تاکہ کسی بھی قسم کے جانی نقصانات سے بچا جاسکے پاکستان پیپلز پارٹی آزاد کشمیر کے مرکزی سینئر نائب صدر صاحبزادہ محمد اشفاق ظفر ایڈووکیٹ نے لینڈ سلائیڈنگ سے ہونے والے نقصان پر افسوس کا اظہار کرتے ہوئے وزیر اعظم آزاد کشمیر سے مطالبہ کیا ہے کہ وہ سردیوں سے قبل ہی متاثرین کو متبادل جگہ اور گھر تعمیرکروانے کے لیے احکامات جاری کریں اس وقت بھی متاثرین کھلے آسمان تلے رہنے پر مجبور ہیں حکومت فوری ریلیف بھی فراہم کرے تانکہ متاثرین کی مشکلات میں کمی ہو۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔

By ajazmir