Tue. Sep 21st, 2021
337 Views

جاوید سلام ،دُکھی انسانیت کی خدمت کا باب ,جو اچانک موت کی ابدی نیند سوگیا ۔
تحریر :۔عبدالوحیدکیانی
موت ایک اٹل حقیقت ہے ،جاوید سلام بھی اچانک موت کا پیالہ پی کر منوں مٹی کی چادر اوڑھ کر ہم سے جدا ہوچکے ہیں ، سال ہاسال ان سے ملنے والی شفقت ،محبت ،خلوص میرے لیے سرمایہ حیات ہے اور ان کے فرزندگان فیصل جاوید ، طیب جاوید بھی اپنے والدگرامی کی تقلید میں ہمیشہ عزت واحترام سے نوازتے رہے جو جاوید سلام صاحب کی اپنی اولاد کی بہترین تربیت کی عکاس ہے ،جاوید سلام ایک اعتماد اورجہدمسلسل کا نام ھے ،اُن کے نام پرقائم جاوید میڈیکل ہال مظفرآباد کے بارے میں مظفرآباد ،جہلم ویلی ،نیلم ویلی اورپونچھ ڈویژن تک کے بیشتر مریضوں کی کامل اور قابل بھروسہ مثبت رائے رہی, 95فیصد مریض جاوید میڈیکل ہال کی ادویات کو تشفی گردانتے ہوئے اپنے ڈاکٹرز کا نسخہ اٹھائے لائن میں لگ کر دوائی خریدتے اوراطمینان قلب کے ساتھ گھروں کو روانہ ہوتے ،اس تمہید کا مقصد محترم جاوید سلام مرحوم کے کاروبار میں ترقی کے پیچھے ُان کی ایمانداری سے طویل جدوجہد اورعوام کا اعتماد کا تسلسل رہا اوراپنے آپ کو اس معیار تک پہنچانے میں کامیابی حاصل کرنا بتانا مقصود ہے جس کی خواہش ہر کوئی کرتا ہے مگر نصیب چند خوش قسمتوں کوہوتا ہے ، جاوید سلام صاحب کی نماز جنازہ مفتی محمود الحسن شاہ مسعودی کی اقتداءمیں ادا کرتے ہوئے میری نظریں وزیراعظم راجہ فاروق حیدرخان ، چوہدری لطیف اکبر صدر پاکستان پیپلزپارٹی ، خواجہ فاروق احمد مرکزی جائنٹ سیکرٹری تحریک انصاف ، غلام مصطفیٰ مغل سابق چیف جسٹس سپریم کورٹ ٫ ذاہد عباسی سکریٹری سکولز عتیق احمد کیانی جنرل سیکرٹری سیرت کمیٹی سے لیکر ، اعلیٰ عدلیہ کے حاضر و ریٹائرڈ ججز صاحبان ، ڈاکٹرز،وکلاء،صحافیوں سے لیکر تمام مکاتب فکر کی شخصیات کی شرکت پر مرکوز رہی , تمام چہرے سوگ کی کیفیت میں تھے اور اکثر کی زبانوں سے یہ الفاظ سنے کہ آج مظفرآباد کے مریضوں کا مسیحا چلا گیا ، جاوید سلام اعلیٰ اخلاقی اقدار کے حامل تھے ہمیشہ نرم شریں زبان سے ملنے والے کو اپنا گروید ہ بنالیتے طب کے شعبہ میں ترقی کے ساتھ ساتھ جس طرح انہوں نے اپنے کاروبار کو جدید خطوط پراستوار کرتے ہوئے قابل ایمانت دیانت صداقت کی تقلید مثالیں چھوڑیں وہ ہمیشہ ان کے تعلق والوں کو ان کی یاد دلاتی رہیں گی ،بس ان کی اچانک جدائی کا دکھ ان کے خاندان سمیت مظفرآباد کے ہرشخص کو ہے کہ زندگی بھر دوسروں کی صحت کےلئے معیاری ادویات مہیا کرے والے کو اپنی بیماری سے شفاکےلئے کوئی دوائی کام نہ آسکی اس سے ہمیں اس حقیقت کو تسلیم کرنا چاہیے کہ ہم بھی موت کی منزل کے راہی ہیں ہمیں ہروقت موت کی تیار ی کے میسر مواقع سے فائدہ اُٹھاتے ہوئے اس کی تیاری کرنی چاہیے کہ سفرلمبا ہے اورتیاری کا وقت کم ہے عبادت ،معاملات ،معیشت ،معاشرت کو خالق کی مرضی ومنشاءکے مطابق کریں تاکہ ہمارا خالق ہم سے راضی ہو ۔دعا ہے کہ جاوید سلام صاحب مرحوم کو رب کائنات جنت الفردوس میں جگہ عطافرمائے اوران کے لواحقین کو صبرجمیل اجرعظیم عطافرمائے اوران کے فرزندگان فیصل جاوید ،طیب جاوید کو ان کےلئے صدقہ جاریہ بنائے۔آمین ۔

Avatar

By ajazmir