Mon. Jan 18th, 2021
119 Views

ریاست آزاد جموں و کشمیر کے سکالر ، علمی و ادبی شخصیت اور ممبر جموں و کشمیر ملی رابطہ کونسل علامہ سید محمد اسحاق نقوی نے راجا اعتزاز علی خان ترک کے نام اپنے تحسین و تہنیت کے پیغام میں کہا ہے کہ راجا شیر علی خان مرحوم کے ہونہار پوتے اور راجا نواز علی خان کے جوانسال فرزند راجا اعتزاز علی خان ترک نے کمال مہارت ،چابک دستی اور جرات سے نوعمر چیتا کو قابو کیا اور گھر لے جا کر اسے طبی امداد دی. اور اس کی خوراک کا انتظام کیا.
اعتزاز علی خان کے اعزہ و اقارب اور دوست و احباب دیکھنے کے لئے آئے.
مرحبا اور آفریں کا غلغلہ بلند ہوا. تصاویر لی گئیں اور ذرائع ابلاغ پر دیکھی گئیں.
شائقین نے رابطے کئے اور لاکھوں روپوں کی پیشکشیں کیں. لیکن اعتزاز علی خان نے اپنے نام اور آباء و اجداد کی لاج رکھتے ہوئے وسعت قلبی کا مظاہرہ کیا اور تمام مادی منفعت کو ٹھکرا دیا.
تین دن تک اس کی طبی دیکھ بھال اور خوراک کا بندوبست کیا.
فطرت سے محبت کی ایک مثال قائم کی. اور مفاد کو بالائے طاق رکھتے ہوئے “جنگل کے بادشاہ” کے فرزند کو اس کی ممکنہ قیام گاہ کے قریب لے جا کر آزاد فضاؤں میں جینے کے لئے آزاد کر دیا.
راجا اعتزاز علی خان ترک کا یہ عمل ہماری کمیونٹی اور پورے علاقہ کے لئے فخر و اطمینان کا باعث ہے.
نوجوانان ملت کیلئے عمدہ پیغام دیا کہ آزادی انسانوں کے لئے ہی لازم نہیں ، فطری آزادی کا حق جنگلی حیاتیات کا بھی ہے.
اعتزاز علی کا یہ اقدام بادی النظر میں بھارت کے وزیراعظم کیلئے بھی ایک پیغام ہے کہ کشمیر سے اپنا جابرانہ تسلط اور غاصبانہ قبضہ اٹھاتے ہوئے اہل کشمیر کو ان کا پیدائشی حق آزادی دیا جائے. اور آزاد فضاؤں میں سانس لینے کا فطری حق دیا جائے.
ہم راجا اعتزاز علی خان کی درازی عمر ، صحت و سلامتی اور خداداد صلاحیتوں میں برکتوں کے لئے دعاگو ہیں.
ہم وزیر ماحولیات و جنگلات اور جناب وزیراعظم سے راجا اعتزاز علی خان کے لئے انعام اور تعریفی سند دینے کا معقول مطالبہ کرتے ہیں.
حکومتی زعما کا یہ عمل نوجوان اعتزاز علی خان کی حوصلہ افزائی اور دیگر لوگوں کے لئے رغبت کا باعث ہو گا.
افراد کے ہاتھوں میں ہے اقوام کی تقدیر…….
ہر فرد ہے ملت کے مقدر کا ستارہ…………

Avatar

By ajazmir