324 Views

ہٹیاں بالا(بیورورپورٹ ) معروف سیاسی و سماجی شخصیت وزیراعظم کے متعمد خاص محمد یوسف خان مرحوم کے نواسوں پر اندھا دھند فائرنگ کے نتیجہ میں طیب شبیر اور باسط شبیر زخمی۔خودساختہ نائب وزیراعظم آمین خان نے علاقے کاامن سبوتاز کررکھا ہے



تفصیلات کے مطابق آمین خان ولد محمد اکبر خان ساکن نلہ چکلی نے گذشتہ ماہ اقبال ولد یوسف کو بغیر قصور تھانہ بند کراویا بعد ازاں عدالت ڈسٹرکٹ کورٹ سے اقبال کو رہائی ملی۔علاقے کے معززین عبدالعزیز خان ۔محمد اعظم خان۔عتیق اللہ ولد محمد اسماعیل خطیب اللہ ولدمحمد اسماعیل نے کہا کہ آمین خان اپنی چودھراہٹ جمانے کی خاطر علاقے میں جاگیردارانہ نظام قائم کرنا چاہتا ہے وہ اپنے آپ کو نائب وزیراعظم گردانتا ہے نے جھوٹے مقدمے۔انارکی۔لڑولڑائی کے زریعے علاقے میں بھائی چارے کی فضا کو تیس نہس کر کے قتل وغارت گری میں تبدیل کر رکھا ہےجھوٹے مقدمے کی خفت مٹانے کے لیے آمین خان۔الیاس خان اور اس کے خاندان کی عورتوں نے بچوں پر بندوق سے اندھا دھند فائر کیا فائر لگنے سے طیب شبیر اور باسط زخمی ہوئے۔سٹی تھانہ میں قاتلانہ حملے کی رپورٹ درج کرائی لیکن پولیس نے بھی ہماری درخواست پر مناسب کاروائی کے بجائے بااثر سیاسی شخصحیات کے کہنے پر لچکدار ایف آئی آر درج کی جسکی وجہ ملزمان کو عبوری ضمانت میں مدد ملی ہماراموقف تھا کہ بچوں پر دھاوا بول کر قاتلانہ حملہ کیا گیا اور زیر دفعہ 324اقدام قتل کا مقدمہ درج ہونا چاہیے لیکن سٹی تھانہ پولیس نے ملزمان سے سازباز کر کے 337 کے تحت مقدمہ درج کیا جو سراسر ظلم اور ناانصافی ہے آمین خان منہ پھٹ اور فحش گالیاں نکال کر دوسروں کو نیچا دکھانے کی کوشش کرتا ہے اس شرپسند فتنہ فساد پھیلانے والے شخص نے علاقے کے لوگوں کا جینا حرام کر رکھا ہے لوگ اس کے شر سے خوفزدہ ہو کر اس کی ہر جائز ناجائز خواہش کو پورا کرتے ہیں۔آمین خان نامی شخص نے ہٹیاں بالا بازار میں غیر قانونی طور پر پراپرٹی بنالی ہے محکمہ مال نے جب غیر قانونی تعمیرات کو بند کروایا تو اس شخص نے پورے عملہ کو اور وزیراعظم کو گالیاں نکالنا شروع کیں اپنی عزت بچانے کے لیے خاموشی اختیار کرلیتے ہیں ایسا ہی محکمہ مال کے اہلکاران نے کیا اب غیر قانونی پراپرٹی سے مال بنا کر بے گناہ معصوم شہریوں کو ہراساں کر رہا ہے مستغیث مقدمہ طیب شبیر نے ڈسٹرکٹ پریس کلب میں صحافیوں کو اپنے اوپر ظالم شخص کے حملے کی داستان سناتے ہوئے کہا کہ ہم نہتے دو بھائیوں پر ایک درجن مردو خواتین نے حملہ کیا آمین خان نے بندوق سے فائر کیا (چھرا) لگنے سے وہ زخمی ہواظالموں کو اس کے باوجود رحم نہ آیا اور انہوں نےاس کو اور اوراسکے بھائی کو لاتوں گھونسوں سے مارا۔متاثرہ خاندان نے وزیراعظم آزادکشمیر جی اوسی مری۔چیف سیکرٹری۔آئی جی پویس ڈی آئی جی پولیس۔ایس پی جہلم ویلی سے اپیل کی ہے کہ انہیں ظالموں کو کیفرکردار تک پہنچایا جائے ظالم ہمیں جان سے مارنے کی دھمکیاں دے چکے ہیں اور انہوں نے جان مارنے کی کوشش بھی کی ہے ہمیں اس بااثر ظالم شخص سے جان کا خطرہ ہے ہمیں انصاف دلایا جائے

Avatar

By ajazmir