لوئر محلہ چناری کے مکینوں کا عید کے موقعہ پر بھی پانی بند محکمہ پبلک ہیلتھ کے ذمہ داران نے کربلا کی یاد تازہ کر دی وزیراعظم آزاد کشمیر کے آبائی حلقہ میں ظلم اور نا انصافی کا بازار گرم ذمہ داران خاموش تماشائی کا کردار ادا کرنے لگے

107 Views

چناری(نامہ نگار)لوئر محلہ چناری کے مکینوں کا عید کے موقعہ پر بھی پانی بند محکمہ پبلک ہیلتھ کے ذمہ داران نے کربلا کی یاد تازہ کر دی وزیراعظم آزاد کشمیر کے آبائی حلقہ میں ظلم اور نا انصافی کا بازار گرم ذمہ داران خاموش تماشائی کا کردار ادا کرنے لگے۔



تفصیلات کے مطابق گذشتہ دو ہفتوں سے لوئر محلہ چناری میں پانی کی شدید مصنوعی قلت پیدا کر دی گئی پبلک ہیلتھ کے مقامی اہلکاروں کا موقف ہے کہ لوئر محلہ کا پانی دن گیارہ بارہ سے دن دو بجے تک کھولا جاتا ہے جبکہ باقی اکیس گھنٹے لوئر محلہ کا پانی کم ہونے کے باعث بند رکھ کر دیگر لائنوں کو کھولا جاتا ہے محکمہ پبلک ہیلتھ کی جانب سے دن گیارہ سے دو بجے تک کھولے جانے والے پانی کا بھی پریشیر اتنا کم ہوتا ہے جو نچلی منزل پر رہنے والے لوگوں کے گھروں میں بھی انتہائی کم مقدار میں آتا ہے جبکہ بالائی منزلوں پر رہائش پذیر افرادگذشتہ دو ہفتوں سے پانی کے بغیر شدید گرمی میں شدید مشکلات کا شکار ہیںدو ہفتے قبل تک چناری لوئر محلہ میں رہنے والے افراد کو پانی کی کسی بھی قسم کی کمی نہیں تھی انکی بالائی منزلوں میں رکھی گئی ٹینکیوں میں بھی وافر مقدار میں پانی بھر جاتا تھالیکن گذشتہ دو ہفتوں سے چناری لوئر محلہ کے مکین پانی کی شدید کمی کے باعث شدید مشکلات اور پریشانیوں سے دو چار ہیںپانی نہ ہونے کے باعث چناری لوئر محلہ کی بالائی منزلوں پر رہنے والے افراد چناری چھوڑنے پر مجبور ہو گئے ہیں چناری لوئر محلہ میں بالائی منزل پر رہنے والے ایک کرایہ دار نے صحافیوں کو بتایا کہ عید پر پانی نہ ہونے کی وجہ سے چناری چھوڑ کر آبائی گھر جا رہا ہوں گذشتہ دو ہفتوں سے چناری لوئر محلہ میں پانی کی قلت کو ختم کرنے کے بجائے محکمہ پبلک ہیلتھ کے مقامی ذمہ دار نے اپنے حمایتیوں سے سوشل میڈیا پر اپنے حق اور صحافیوں کے خلاف پروپگنڈہ شروع کر رکھا ہے عوامی حلقوں نے وزیر اعظم ،وزیر تعمیرات عامہ ،چیف سیکرٹری اور ڈپٹی کمشنر جہلم ویلی سے ایک بار پھر چناری لوئر محلہ میں پانی کی مصنوعی قلت کے نوٹس لینے اور ذمہ داران کے خلاف کارروائی کا مطالبہ کیا ہے عوامی حلقوں کا کہنا ہے کہ اگر ذمہ داران نے محکمہ بپلک ہیلتھ چناری کے ذمہ دار کا قبلہ درست نہ کیا اور پانی کی قلت کے خاتمہ کے احکامات جاری نہ کیے تو عوام سڑکوں پر آنے پر مجبور ہوں گے اور اس دوران حالات خرابی کی ذمہ داری محکمہ پبلک ہیلتھ پر عائد ہو گی