جب تک ہم انفرادی طور پر ایس او پیزپر عملدرآمد نہیں کریں گے کرونا وائیرس سے محفوظ نہیں رہ سکتے ہیں۔ڈاکٹر بشری شمس

109 Views

راولاکوٹ( پی آئی ڈی ) کورڈ 19آزادکشمیر کی فوکل پرسن ڈاکٹر بشری شمس نے کہا ہے کہ جب تک ہم انفرادی طور پر ایس او پیزپر عملدرآمد نہیں کریں گے کرونا وائیرس سے محفوظ نہیں رہ سکتے ہمارے بہت کم لوگ ونٹی لیٹرپر جارہے ہیں ۔ ہم تھوڑی سی اختیاط اختیار کریں تواس قاتل وائیرس سے بچ سکتے ہیں ۔وہ غازی ملت پریس کلب راولاکوٹ میں ایک پریس بریفنگ کے دوران گفتگو کررہی تھیں اس موقع پر ڈسٹرکٹ ھیلتھ آفیسر سردار محمد حیات خان ، ڈپٹی ڈایئریکٹر پی پی آئی اور نگزیب مغل ، ڈپٹی ڈائیریکٹر اطلاعات سعداللہ خان ، آفیسر اطلاعات راجہ علاﺅالدین منہاس کے علاوہ ریڈیو ٹی وی کے نمائندوں اور نامور صحافیوں کی ایک بڑی تعداد موجود تھی ڈاکٹر بشری شمس نے کہاکہ اس وقت پوری دنیا میں لاکھوں لوگ اس وائرس سے متاثر ہو چکے ہیں ہم اردگرد لوگوں میں اویئرنس کے ذریعے قیمتی جانیں بچا سکتے ہیں ہمیں اس حوالے سے اپنی ذمہ داریاں پوری کرنا ہوں گی انھوں نے ایک سوال کے جواب میں کہا کہ آج سے چار ماہ پہلے جب یہ وائرس آیا تو ہم نے ایس اوپیز طے کرنے کیلئے کچھ وقت لگایا انھوں نے کہا کہ اکثر لوگ ماسک نہیں پہنتے جوکہ افسوس ناک ہے اس وائرس کی ویکسین تیار ہونے تک باقاعدگی سے ماسک پہنیں چھ فٹ کا فاصلہ رکھیں ایک دوسرے سے گلے نہ ملیں ہاتھ نہ ملائیں 60سال سے زائد افراد بازاروں کا رخ نہ کریں گھروں میں رہ کر مکمل احتیاطی تدابیر اختیار کرنے سے ہم اپنے آپ کو اور دیگر سوسائٹی کو مہلک مرض سے بچا سکتے ہیں اس موقع پر ڈاکٹر سدرة العےن نے جدید طریقہ کار بچاﺅ سے آگاہ کرتے ہوئے آگاہی مہم کو تیز کرنے کی ضرورت پر زور دیا انھوں نے کہا کہ جو لوگ اس جراثیم کو پھیلانے سے روکنے کا طریقہ کار کو نہیں سمجھتے انھیں آگاہ کرنے کے ساتھ ساتھ عملی اقدامات کے طریقہ سمجھانا بھی ہماری ذمہ داری ہے اس موقع پر ڈاکٹر سردار محمد حیات خان صدر غازی ملت پریس کلب راولاکوٹ ملک اعجاز قمر اور دیگر قومی پریس کے نمائندوں نے مختلف سوالات کئے جس پر فوکل پرسن ڈاکٹربشری شمس نے جوابات دیئے اور سامعین کو مطمین کیا ڈاکٹر بشری شمس نے واضح کیا کہ ہم انفرادی اور اجتماعی کوششوں کے ساتھ ساتھ وضع کردہ ایس او پیز پر عمل کرکے ہی اس مہلک بیماری کے پھیلاﺅ کو روک سکتے ہیں۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔
۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔