پاکستان پیپلز پارٹی آزاد کشمیرکے صدر چوہدری لطیف اکبر نےکوہالہ ہائیڈرل پراجیکٹ کے موجودہ معاہدہ پرتحفظات کا اظہار کرتے ہوئے اسےمسترد کردیا

136 Views

مظفرآباد( )پیپلز پارٹی پن بجلی منصوبہ بنانے کی پرزور حمایت کرتی ہے لیکن ہمارا مطالبہ صرف یہ ہے کہ اس کے ڈیزائن تبدیل کیا جائے ٹنل ٹیکنالوجی کے بجائے دریا جہلم کے قدرتی بہاؤ پر ایک کے بجائے 5،6 بجلی گھر تعمیر کئے جائیں جس سے بجلی کی پیداوار بھی زیادہ ہوگی اور ماحولیاتی اثرات بھی کم سے کم بلکہ نہ ہونے کے برابر ہوں گے جس سے منصوبہ کی لاگت میں بھی خاطر خواہ کمی ہوگی اور روزگار کے مواقع بھی پیدا ہوں گے۔ چوہدری لطیف اکبر نے مطالبہ کیا کہ حکومت آزاد جموں وکشمیر معاہدہ کو پبلک کرے اور اس معاہدہ کو اسمبلی میں پیش کرے اور اس پر سیر حاصل بحث ہو سکے۔ اسمبلی میں اس معاہدہ کو بہر صورت زیر بحث لایا جائے۔پاکستان پیپلز پارٹی کے صدر چوہدری لطیف اکبر نے ایک پریس بریفنگ میں کوہالہ ہائیڈل پرجیکٹ جو موجودہ صورت میں مسترد کردیا ہے اور مطالبہ کیا ہے کہ اس کے ڈئزائن کو تبدیل کیا جا ئے اس کے موجودہ ڈیزائن کی صورت جہاں ماحولیاتی اثرات مرتب ہوں گے وہاں انسانی زندگی پر انتہائی منفی اثرات ہوں گے۔انہوں نے مطالبہ کیا کہ اس سے قبل بھی نیلم جہلم ہائیڈل منصوبہ کے اثرات موسمی ماحول تباہ ہو چکا ہے اس سے جنگلات تباہ ہو جائیں گے اور انسانوں کی زندگی مفلوج ہو کر رہ جائیگی جنگلی حیات، چرند و پرند ختم ہو جائیں گے۔کوہالہ پروجیکٹ کو موجودہ ڈیزائن کے مطابق تعمیر کرنے سے مظفرآباد ڈویژن،اور ضلع باغ بری طر ح متاثر ہوں گے انہوں نے مزید کہا کہ مظفرآباد شہر اور دریائے جہلم کے بائیں کنارے پر بسنے والی آبادیاں جن میں چکار اور کھاوڑہ کا علاقہ شامل ہے انسانوں کے رہنے کے قابل نہیں رہے گا اور کچھ عرصہ بعد یہ علاقے بنجر ہو جائیں گے۔